لاہور ( ویب ڈیسک) سرکاری دستاویزات میں دانش سکولز میں 75 کروڑ 91 لاکھ کی مالی بدعنوانیوں کی نشاندہی ثابت ہوگئی۔ چیئرمین نیب نے سپریم کورٹ آف پاکستان کے حکم پر دانش سکولوں میں مالی بدعنوانیوں کا ریکارڈ پیش کردیا اور عدالت میں تسلیم کیا کہ اعلیٰ سیاسی دباؤ کی بنا پر نیب کے آفیسروں کو ذمہ داروں کے خلاف کارروائی میں دشواریوں میں سامنا ہے۔
تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان نے چئیر مین نیب کو ہدایت کی ہے کہ وہ بغیر کسی دباؤ کے خواہ وہ سیاسی ہو یا کوئی بھی دانش سکول سسٹم کے خلاف تحقیقات کا عمل جاری رکھیں اور کرپشن میں جو جو ملوث ہے اسکے خلاف ایکشن لیا جائے۔ اس بابت میں عدالت نے چئیرمین نیب کو 3 ماہ کا ٹائم دیا ہے کہ وہ تحقیقات مکمل کر کے کوڑت میں پراگرس رپورٹ جمع کروائے۔ عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ نیب کو سیاسی دباؤ کا سامنا رہا ہے جسکی وجہ سے میگا کرپشن کیسز کے کلاف انکوئری مکمل نہیں ہو سکی۔ روزنامہ خبریں کے مطابق اعدادوشمار کے مطابق ڈی سی او راجن پور جو دانش سکول راجن پور کے بورڈ آف گورنر کے سربراہ ہیں وہ پرنسپل دانش سکولوں کے خورد برد کی گئی 51 لاکھ 22 ہزار 3 سو 91 روپے کی ریکوری کرنے میں مکمل ناکام رہے جبکہ بورڈ آف ڈائریکٹرز (ڈی سی او راجن) دانش سکول کے سربراہ کی حیثیت سے 4 کروڑ 19 لاکھ 62ہزار کی رقم ہڑپ کرگئے۔ ڈی سی ڈیرہ غازی خان بھی بورڈ آف گورنر دانش سکول کے سربراہ کی حیثیت سے 2 کروڑ 17لاکھ 77 ہزار خوربرد کرگئے۔ ڈی سی او مظفر گڑھ بھی دانش سکول کے بورڈ آف گورنر کے چیئرمین کی حیثیت سے 1 کروڑ 71 لاکھ 63 ہزار کی مالی بدعنوانیاں کیں جبکہ ڈی سی او روجھان نے بھی بورڈ آف گورنر دانش سکول کے سربراہ کی حیثیت سے 65 لاکھ 41 ہزار 243 روپے ہڑپ کرگئے جس کا ریکارڈ موجود نہیں۔ اخبار کے مطابق دانش سکولوں کو خوراک اور دیگر اشیاءکی سپلائی میں پیپرارولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے 22 کروڑ 40 لاکھ کی مالی بدعنوانیوں کا ریکارڈ بھی سپریم کورٹ آف پاکستان میں پیش کردیا گیا۔ اس ریکارڈ کے مطابق ڈی سی او ڈیرہ غازی خان نے چیئرمین بورڈ آف گورنرز دانش سکولز 21 کروڑ 29 لاکھ سے زائد کی مالی بدعنوانیاں کیں جس کا ریکارڈ موجود نہیں ہے۔ اس طرح ڈی سی او میانوالی نے چیئرمین بورڈ آف گورنرز دانش سکول 95 لاکھ 54 ہزار جبکہ ڈی سی او راجن پور کے چیئرمین بورڈ آف گورنرز دانش سکولز کی حیثیت سے 54 لاکھ 41 ہزار 137روپے کی مالی بے ضابطگیاں کیں جس کا ریکارڈ موجود نہیں۔ اخبار کے مطابق ڈی سی اور ڈی جی خان نے دانش سکولوں کی دیواروں، دروازوں کی تزین و آرائش کیلئے خریداری کی مد میں ٹھیکیدار پر مہربانیاں کرتے ہوئے 17لاکھ 63 ہزار 977 روپے کی زائد ادائیگیاں کیں جن کے ووچرموجود نہیں ہیں۔( ج، ث )

LEAVE A REPLY