Amana Babar shared herself with pictures of Harassment
Amana Babar shared herself with pictures of Harassment

Amana Babar shared herself with pictures of Harassment

اکستانی ماڈل آمنہ بابر نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر تین لڑکوں کی تصاویر شیئر کی، جو لاہور میں ان کے گھر کے باہر انہیں ہراساں کررہے تھے۔

اپنی پوسٹ میں آمنہ نے بتایا کہ یہ لڑکے ان کا پیچھا کرنے کے ساتھ نازیبا اشارے کررہے تھے، جبکہ اس دوران آمنہ کی والدہ بھی ان کے ساتھ موجود تھیں۔

آمنہ نے مزید بتایا کہ یہ لوگ دن کی روشنی میں انہیں ہراساں کرتے رہے تاہم وہاں موجود کسی بھی شخص نے ان لڑکوں کو روکنے کی کوشش نہیں کی۔

بعدازاں آمنہ کی والدہ نے انہیں دھمکی دی جس کے بعد یہ لڑکے فوری وہاں سے چلے گئے۔

آمنہ نے اپنی پوسٹ پر سوال کیا کہ ’مردوں کو خواتین اور لڑکیوں کو ڈرانے کی کیا ضرورت ہے؟ یہ سب کب ختم ہوگا؟ لوگ صرف کھڑے دیکھ کیوں رہے ہوتے ہیں، ایسی چیزیں قابل قبول کس طرح ہوسکتی ہیں؟‘

خیال رہے کہ 25 سالہ آمبہ بابر کا شمار پاکستان کی نامور ماڈلز میں کیا جاتا ہے، جو بڑے بڑے برینڈز اور فیشن شوز کا حصہ بنتی رہتی ہیں۔

انہیں 2014 میں منعقد لکس اسٹائل ایوارڈز میں بہترین ابھرتی ہوئی ماڈل کا ایوارڈ دیا گیا تھا جبکہ ہم ایوارڈز میں وہ 2 مرتبہ بہترین ماڈل کا اعزاز حاصل کرچکی ہیں۔

LEAVE A REPLY